No. 4 Ahadeeth Pertaining to Repentance

Hadeeth no. 4

إذا أرادَ اللهُ بعبدِه الخيرَ

Ahadeeth Pertaining to Repentance, Admonition
& Softening of the Heart

Taken from
Silsilah Ahadeeth As-Saheehah

of
Shaykh Muhammad Nasiruddeen Al-Albaani

Translated
by
Abbas Abu Yahya



4 – From Anas from the Prophet ﷺ :
إذا أراد الله بعبدٍ الخيرَ عجَّلَ له العقوبةَ في الدُّنيا،
وإذا أراد الله بعَبدِ شَّرَّا أمسك عليه بذَنبِه حتى يوافيَه يومَ القيامةِ
‘When Allaah intends good for a slave of His, He hastens the punishment for him in the Dunyaa.  When He destines evil for a slave of His then He withholds back his sins until he recompenses him for them on the Day of Judgement.’

[Collected by Tirmidhi, Ibn Adee, al-Bayhaqi in ‘Al-Asmaa’ & Al-Albaani graded it Hasan No. 1220]



Arabic
عن أنس مرفوعا:
إذا أرادَ اللهُ بعبدِه الخيرَ عجَّلَ لهُ العقوبةَ في الدنيا، وإذا أرادَ بعبدِه الشرَّ أمسَكَ عنهُ بذنْبِه حتى يُوافَي به يومَ القيامةِ

رواه الترمذي (2 / 64) وابن عدي والبيهقي في ” الأسماء” و حسنه الألباني  في سلسلة الأحاديث الصحيحة وشيء من فقهها وفوائدها  1220
  
Urdu
انس رضی اللہ عنہ بیان کرتے ہیں کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا: ”جب اللہ تعالیٰ اپنے بندے کے ساتھ خیر و بھلائی کا ارادہ فرماتا ہے تو اس کو (اس کے گناہوں کی سزا) جلد ہی دنیا میں دے دیتا ہے (یعنی تکلیفوں اور آزمائشوں کے ذریعے سے اس کے گناہوں کی معافی کے اسباب پیدا کر دیتا ہے) اور جب کسی بندے کے ساتھ برائی کا ارادہ کرتا ہے تو اس سے اس کے گناہوں کی سزا (دنیا میں) روک لیتا ہے، یہاں تک کہ قیامت والے دن اس کو پوری سزا دے گا۔“

سلسله احاديث صحيحه ترقیم البانی: 1220

%d bloggers like this: